Search Previous Papers

Tuesday, 24 December 2013

Honourable High Court Islamabad Dismissed the Petition Filed by Pakpol against the Decision of Ministry of Interior regarding stop sending Police at UN Mission

افسروں کو یو این مشن پر بھیجنے کی پالیسی، حکومت
 240افرادکو مشن پر بھجوادیاگیا ہے جبکہ ٹکٹ سمیت تمام ضروری اقدامات ہونے کے باوجود درخواست گزاروں کو اجازت نہیں دی جارہی)
  اسلام آباد: اسلام آباد ہائیکورٹ کے جسٹس ریاض احمد خان پر مشتمل سنگل بینچ نے اقوام متحدہ امن مشن پر پولیس افسروں کو نہ بھیجنے کیخلاف درخواستیں ناقابل سماعت قراردیتے ہوئے مسترد کردیں۔
عدالت نے آبزرویشن دی کہ افسران کی بیرون ملک پوسٹنگ حکومت کا صوابدیدی اختیار ہے، عدالت نے وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان کی قابل افسران کو بیرون ملک نہ بھیجنے کی پالیسی کو تسلیم کرلیا ہے۔ سیکریٹری داخلہ شاہد خان نے عدالت کو بتایا کہ ملک میں امن وامان کی صورتحال کے پیش نظر یواین مشن پر افسران کو بھیجنے کی پالیسی کوتاحکم ثانی روک دیاگیا ہے، وزیرداخلہ نے اس کی منظوری دیدی ہے۔ درخواست گزارپولیس افسروںکی جانب سے ایڈووکیٹ چوہدری اشرف گوجر نے موقف اختیارکیا کہ وزارت کی جانب سے بیان میں کہاگیا ہے کہ6 نومبر سے یو این مشن پر پابندی عائد کردی گئی ہے جبکہ تیس نومبرکو اسلام آباد کا ایک انسپکٹر مشن پر بھجوایاگیا ہے،240افرادکو مشن پر بھجوادیاگیا ہے جبکہ ٹکٹ سمیت تمام ضروری اقدامات ہونے کے باوجود درخواست گزاروں کو اجازت نہیں دی جارہی۔

اشرف گوجر نے اعتراض اٹھایا کہ مشن پر افسران نہ بھجوانے کی پالیسی کی وزیراعظم اور وزارت خارجہ سے منظوری نہیں لی گئی۔ اشرف گوجر نے موقف اختیارکیا کہ وزارت داخلہ کے افسران مشن پر موجود افسران سے رشوت لیکران کے قیام میں توسیع کر دیتے ہیں، باقی ماندہ افسران کو نہ بھجوانے کا اصل مقصد یہی ہے، وزارت داخلہ کے افسران نے درخواست گزاروں سے بھی رشوت مانگی تھی۔ واضح رہے کہ وزیرداخلہ چوہدری نثار علی خان نے ارکان پارلیمنٹ کے دبائوکو پس پشت ڈالتے ہوئے قابل افسران کو بیرون ملک بھجوانے کی پالیسی کو تاحکم ثانی روکنے کا حکم دیاتھا۔ان کاموقف تھا کہ بیرون ملک پوسٹنگ کیلیے قابل ترین افسران کاچنائوکیاجاتاہے جبکہ ملک کی موجودہ صورت حال میں ان افسران کی یہاں ضرورت ہے،پالیسی میں واضح طور پرکہاگیا ہے کہ باہر موجود تمام افسران کی پوسٹنگ میں مزید توسیع نہیںکی جائے گی

Islamabad: Justice Riaz Ahmad Khan of the Islamabad High Court (IHC) here on Tuesday dismissed a petition in which three DSPs and one inspector from Punjab Police alongside an inspector of FIA had contended before the court that the Ministry of Interior has not been handing them over their air tickets to join the United Nations peacekeeping missions in Liberia and Darfur.

The Ministry of Interior secretary appeared before the court and said that the federal government has formulated a new policy according to which no police official would be allowed to join the UN peacekeeping mission abroad in the context of law and order situation in the country.

The detailed judgment in the case would be issued in a few days. Petitioners DSP Ehsan Ullah Chohan and others through their counsel Muhammad Ashraf Gujjar had adopted before the court that the Ministry of Interior has been withholding their tickets and not handing them over citing law and order situation in the country.

The petitioner’s counsel told the court that his clients were treated discriminately as 240 police officers have already been departed and deployed in different UN peacekeeping missions around the world.


Moreover, a considerable number of armed forces personnel and rangers had also been deployed despite the fact that there is law and order situation in the country. The Ministry of Interior has only stopped 161 officials.

Search This Blog

Visitor Map

Facebook page like

Powered by Textbook Widget

Popular Posts

Mouseflow